'لفظ سے لفظ' اور 'لفظ بہ لفظ' کے درمیان کیا فرق ہے؟


جواب 1:

یہ ایک بہت ہی عمدہ سوال ہے ٹیریٹ! آپ کا شکریہ!

ہر لفظ بہ الفاظ بہت آسانی سے "ایک وقت میں ایک لفظ" سے مراد ہے۔ اس کا استعمال مشاہدہ کریں: "ہم نے اپنے آرٹیکل آرٹیکل کو لفظ بہ لفظ اسکین کیا تاکہ یہ دیکھیں کہ ہمارے ڈانس گروپ کے نام کا ذکر کیا گیا ہے۔"

"یہ ہمیشہ دانشمند ہے کہ اس پر دستخط کرنے سے پہلے ایک لفظی دستاویز کے ذریعے لفظی الفاظ کے ذریعے جانا۔"

اس کے برعکس ، لفظ کے لفظ سے تحریری ٹکڑے کا عین مطابق پنروتپادن مراد ہوتا ہے یا جب کسی چیز کا بالکل اسی یا مساوی الفاظ میں ترجمہ کیا جاتا ہے۔

"میں حیران ہوں کہ آپ فلمی مکالمات ، لفظ بہ لفظ یاد کرسکتے ہیں۔"

"معائنہ کار کو مشکوک ہو گیا جب اسے دو طلباء کے مضامین ایک دوسرے کے الفاظ کی نقل کے لئے لفظ معلوم ہوئے۔"

دلچسپ بات یہ ہے کہ ہمارے برصغیر پاک میں لفظ کے لئے فقرے کے الفاظ اکثر الفاظ کے معنی میں استعمال ہوتے ہیں اور کسی چیز کی مضبوط یادداشت کا مطلب ہے۔ مثال کے طور پر:

"مجھے گانوں کے الفاظ کی دھن کو الفاظ کے مطابق یاد ہے۔" جبکہ ، ان کا اصل مطلب یہ تھا کہ ، "مجھے گیت کے لفظ کی دھن یاد آتی ہے۔" مؤخر الذکر کا یہ موزوں جملہ ہے کہ 'مجھے گانوں کو بہت اچھی طرح سے یاد ہے۔ '

یہ ان متنازعہ تبادلوں میں سے ایک ہے جسے مادری زبان کے اثر و رسوخ (ایم ٹی آئی) سے منسوب کیا جاسکتا ہے ، کیونکہ بیشتر ہندوستانی زبانوں کے مطابق ، لفظ بہ لفظ حفظ کے عمل کے لئے قریب تر مماثلت معلوم ہوتا ہے جب کہ لفظ کے اصل معنی والے جملے کے الفاظ کی نسبت۔


جواب 2:

لفظ کے لئے لفظ کا مطلب بالکل اسی انداز یا تکرار سے ہوتا ہے۔

جملہ کی تشکیل: اس نے بلیک بورڈ لفظ سے متن کاپی کی۔

ہر لفظ کے معنی ہیں ایک وقت میں کسی ایک لفظ کو دیکھنا۔

جملہ کی تشکیل: اساتذہ کی خواہش تھی کہ سوالات کی کوشش سے پہلے اس کے طلباء لفظ بہ لفظ فہم کے لفظ سے گزریں۔


جواب 3:

لفظ کے لئے لفظ کا مطلب بالکل اسی انداز یا تکرار سے ہوتا ہے۔

جملہ کی تشکیل: اس نے بلیک بورڈ لفظ سے متن کاپی کی۔

ہر لفظ کے معنی ہیں ایک وقت میں کسی ایک لفظ کو دیکھنا۔

جملہ کی تشکیل: اساتذہ کی خواہش تھی کہ سوالات کی کوشش سے پہلے اس کے طلباء لفظ بہ لفظ فہم کے لفظ سے گزریں۔


جواب 4:

لفظ کے لئے لفظ کا مطلب بالکل اسی انداز یا تکرار سے ہوتا ہے۔

جملہ کی تشکیل: اس نے بلیک بورڈ لفظ سے متن کاپی کی۔

ہر لفظ کے معنی ہیں ایک وقت میں کسی ایک لفظ کو دیکھنا۔

جملہ کی تشکیل: اساتذہ کی خواہش تھی کہ سوالات کی کوشش سے پہلے اس کے طلباء لفظ بہ لفظ فہم کے لفظ سے گزریں۔